بھارتی حملہ: آسٹریلیا بھی پاکستان پر چڑھ دوڑا

پاکستان پر بھارتی حملے کے بعد آسٹریلیا کی جانب سے پاکستان کیلیے فرمان جاری کیا گیا ہے.

فرمان میں کہا گیا ہے کہ

آسٹریلیا کی حکومت 14 فروری کو جموں و کشمیر میں خوفناک دہشت گرد حملے کے بعد بھارت اور پاکستان کے درمیان تعلقات کے بارے میں فکر مند ہے، جس میں آسٹریلیا کی جانب سے مذمت کی گئی ہے.

بھارت کے خارجہ سیکرٹری نے کہا ہے کہ پاکستان میں دہشت گردی کے خلاف کارروائیوں کا نشانہ بنایا گیا ہے.

پاکستان کو اپنے علاقے میں دہشت گردی کے خلاف فوری اور بامعمل کارروائی کرنا چاہیے، جس میں جیش محمد سمیت 14 فروری کو بم دھماکے اور لشکر طیبہ کی ذمہ داری کا دعوی کیا گیا ہے.

پاکستان کو جیش محمد کے خلاف عملی اقدامات اٹھانا ہوں گے. پاکستان سے انتہا پسند گروپوں کو اس کے علاقے سے چلانے کے لئے قانونی اور عملی جگہ کی اجازت نہیں دی جا سکتی.

یہ اقدامات کشیدگی کو کم کرنے اور تنازعہ کے بنیادی سببوں کو حل کرنے میں کافی اہم کردار ادا کریں گے

آسٹریلیا دونوں اطراف سے صبر کی امید کرتا ہے، اور کسی ایسی کارروائی سے بچنے کے لئے پرامید ہے جو خطے میں امن اور سلامتی کو خطرے میں ڈالے.