عمران خان کی پولیس فرعون بن گئی

عمران خان کی تبدیلی سرکار میں پولیس گردی کا ایک اور واقعہ سامنے آیا ہے. ٹھوکر نیاز بیگ چوکی کے فرعون سب انسپکٹر یونس نے پرائمری سکول ہیڈ ماسٹر پر ظلم کی حد کر دی.

جہاں ایک طرف پولیس نے فوتگی والے گھر دھاوا بولا وہیں دوسری طرف پتنگ بازی کے الزام پر عورتوں کو زخمی کر دیا.

سکول ہیڈ ماسٹر اشفاق احمد کو تھانے لے جا کر اپنے پاؤں میں بٹھا کر معافیاں منگوائیں گیں.

ہیڈ ماسٹر کے وکیل کے مطابق اشفاق احمد کو قابل رحم حالت میں تھانے میں زمین پہ بٹھایا گیا. اس کا جرم یہ ہے کہ اس پر الزام ہے اس کے گھر پہ پتنگ اڑی جو جھوٹ تھا. پولیس دیدہ دلیری سے اس کے گھر میں گھسی اس بنا پہ کہ ان کہ خیال میں ان کے گھر کی چھت پہ پتنگ اڑرہی تھی اس وقت گھر میں احباب موجود تھے محلہ داران تھے کیونکہ ان کی والدہ کا انتقال ہوا تھا افسوس کرنے لوگ آرہے تھے. پولیس کو اہل محلہ نے کہا کہ یہ شریف آدمی ہے جس پر پولیس نے گالیاں دیں. تین تھانوں کی پولیس بلائی اس کے گھر میں توڑ پھوڑ کی اس کی بچی کو زخمی کیا ان سب کو تھانے بند کیا جس کی ویڈیو تصاویر موجود ہے مگر آج تک کوئی کاروائی نہیں ہوئی. یہ فوٹو طمانچہ ہے اس تبدیلی حکومت کہ منہ پہ جس کے دعوے تو بہت ہیں مگر صورتحال اس تصویر سے عیاں ہے.