عوامی دباؤ پر فلیگ شپ ریفرنس کا تفصیلی فیصلہ جلد بازی میں چھٹی کے دن جاری

اسلام آباد کی احتساب عدالت نے عوامی دباؤ پر فلیگ شپ ریفرنس کا تفصیلی فیصلہ جلد بازی میں چھٹی کے دن جاری کردیا جس میں نواز شریف کو بری کیا گیا ہے۔

عدالت کا یہ فیصلہ 80 سے زائد صفحات پر مشتمل ہے۔ احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے چھٹی کے روز فیصلہ تحریر کیا جس میں کہا گیا کہ قومی احتساب بیورو (نیب) نواز شریف کے خلاف فلیگ شپ ریفرنس میں جرم ثابت نہیں کرسکا اور نیب کی طرف سے پیش کی گئی دستاویزات نامکمل ہیں۔

یاد رہے کہ رواں ماہ اسلام آباد کی احتساب عدالت کی جانب سے سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کو العزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنس میں 7 سال قید اور جرمانے کی سزا سنا دی گئی جس کا فیصلہ فوری طور پر جاری کر دیا گیا مگر فلیگ شپ ریفرنس میں بری کیے جانے کے بعد فیصلہ دبا دیا گیا جس پر عوام میں اشتعال پھیل گیا.