مراکشی خاتون نے بوائے فرینڈ کو قتل کرکے اس کا گوشت پکا کر پاکستانی مزدوروں کو کھلا دیا

متحدہ عرب امارات میں مراکشی خاتون نے شادی سے انکار پر سابق بوائے فرینڈ کو قتل کرنے کے بعد اس کا گوشت پکا کرپاکستانی مزدوروں کو کھلادیا۔

سرجن نے ریڑھ کی ہڈی کے آپریشن میں گردے کو ٹیومر سمجھ کر نکال دیا

اماراتی میڈیا کے مطابق یہ لرزہ خیز واقعہ چند روز قبل اس وقت منظر عام پر آیا جب مقتول کی تلاش کے لیے پولیس مشتبہ خاتون سے تفتیش کررہی تھی۔ خاتون کی شناخت ظاہر کیے بغیر بتایا گیا کہ 30 سالہ خاتون کا اپنے ہم وطن نوجوان سے معاشقہ چل رہا تھا اور خاتون کافی عرصے سے اس کی مالی معاونت بھی کررہی تھی۔

نوجوان نے خاتون کو بتایا کہ وہ کسی اور لڑکی سے شادی کررہا ہے جس پر خاتون نے مشتعل ہوکر نوجوان کو قتل کرڈالا اور لاش کی بوٹیاں بنا کر عرب کی مشہور روایتی ڈش مشبوس بنا کر پاکستانی مزدوروں کو کھلا دیا اور باقی کتوں کے آگے ڈال دیا۔

پولیس کو واقعے کا علم اس وقت ہوا جب مقتول کے بھائی نے اپنے چھوٹے بھائی کے لاپتہ ہونے پر رپورٹ درج کرائی ، پولیس نے مراکشی خاتون کے گھر پر تفتیش کے لیے جب چھاپا مارا تو جوسر بلینڈر سے ایک انسانی دانت برآمد ہوا، پولیس نے دانت کو ڈی این اے ٹیسٹ کرایا جس سے مقتول کی شناخت ہوئی اور پھر خاتون کو گرفتار کرلیا گیا۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ خاتون نے اعتراف ِ جرم کرلیا ہے اورقتل کی گھناؤنی واردات سے پردہ اٹھایا ہے۔