میں گیارہواں امام ہوں، میرے بعد امام مہدی آنے والے ہیں, ہر شہری استغفراللہ کہنے پر مجبور ہو جائے

عبداللہ بن منیب نامی ایک نام نہاد عالم نے گیارہواں امام اور خلیفہ ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے نام ایسا پیغام جاری کر دیا ہے کہ سن کر ہر شخص استغفار کہنے پر مجبور ہو جائے گا۔ ڈیلی پاکستان گلوبل کے مطابق عبداللہ بن منیب نے کسی نامعلوم مقام پر ایک پریس کانفرنس کی ہے جس کی ویڈیو سوشل نیٹ ورکنگ ویب سائٹس پر گردش کر رہی ہے۔ اس شخص نے پریس کانفرنس میں کہا ہے کہ ”میں اسلام کا گیارہواں امام اور خلیفہ راشد ہوں اور میرے بعد امام مہدی آنے والے ہیں، جو شخص میری اور میرے پیروکاروں کی مخالفت کرے گا وہ راندہ درگاہ ہو گا۔ وزیراعظم عمران خان اور جنرل قمر جاوید باوجوہ بھی میری اتباع کریں ورنہ انہیں اللہ کے غیض وغضب کا سامنا کرنا پڑے گا۔“

اس نام نہاد عالم نے اپنی 10منٹ کی ویڈیو میں بارہا اپنی پیروی نہ کرنے والوں کو اللہ کے قہر سے ڈرنے کی دھمکیاں دیں۔ اس نے یہ بھی کہا کہ ”کبھی بھی میری، میرے خاندان اور رشتہ داروں کی توہین کرنے یا تمسخر اڑانے کی کوشش مت کرنا، ورنہ روزمحشر تمہیں کڑی سزا کا سامنا ہو گا۔ میں اس شخص کو کبھی معاف نہیں کروں گا جو میری توہین کرے گا۔“ اس نے پاکستانی نوجوانوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ” میں پاکستان کے نوجوانوں کو ہدایت کرتا ہوں کہ وہ عالمی بغاوت میں میرے ساتھ شامل ہو جائیں، کیونکہ میں امامت کا محافظ ہوں۔“اپنی تقریر میں اس نے کشمیراور فلسطین کے مسلمانوں کی حالتِ زار پر بھی بات کی۔