ڈنمارک: کمپنیاں یورپ سے باہر کے ہنر مندوں کو آسانی سے بلا سکیں گیں

ڈنمارک (اردو ورلڈ نیوز) وزیر اعظم لارس لوکے راس موسن اور اپوزیشن لیڈر میٹی فریڈرکسن نے کہا ہے کہ ڈنمارک کی کمپنیاں غیر ملکی سپیشلسٹ بلا سکیں گیں

دونوں لیڈروں نے ڈینش انڈسٹری کے سمینار میں بات کرتے ہوے غیر ملکی سپشلسٹوں کے بارے میں بات کی

ڈنمارک: اب آپ کا ڈرائیونگ لائسنس ایک اپلی کیشن کی صورت میں ہو گا

وزیر اعظم نے کہا ” ڈنمارک کے کاروباری ادارے اپنی ضرورت کے ملازمین کو نوکری دینے کے قابل ہونے چاہیے بشمول یورپ سے باہر کے ہنر مند افراد کو .”

انہوں نے وعدہ کیا کہ وہ کچھ ہفتوں میں ایک پروپوزل جاری کریں گے جس میں وہ ڈنمارک کی کمپنیوں کے لیے آسانی پیدا کریں گے کہ وہ یورپ سے باہر کے ہنر مند ملازمین کو نوکری دے سکیں

ڈنمارک میں یورپی تاریخ کے سب سے بڑے منی لانڈرنگ اسکینڈل کا انکشاف

انہوں نے سوشل ڈیموکریٹ لیڈر کی تعریف کی کہ وہ اس مقصد میں ہماری حمایت کر رہے ہیں

وزیر اعظم نے کہا کہ وہ اس معاملے میں دوسروں سے ایک قدم آگے جا کر غیر ملکی ہنر مندوں کے لیے سہولیات دیں گے

ڈنمارک کی پاکستانی عالم پر پابندی

انہوں نے ماضی کی پارلیمنٹری کمیٹی پر تنقید کی جس نے یورپ سے باہر کے ملازمین کو ڈنمارک لانے کے لیے تنخواہ کی حد کو بڑھا دیا تھا

اس وقت یہ حد چار لاکھ سترہ ہزار سات سو ترانوے کراؤن ہے

ڈنمارک: پولیس اور گینگ کی ایک دوسرے پر فائرنگ کا واقعہ