ڈنمارک: سستی شہرت حاصل کرنے کے لیے اردو میڈیا پر گھنونا الزام

ڈنمارک (اردو ورلڈ نیوز) سستی شہرت حاصل کرنے کے لیے ڈنمارک کے مقامی اقلیتی ریڈیو کے تجزیہ کار نے پاکستان کے اردو میڈیا پر گھنونا الزام عاید کیا ہے

عمران خان کی طرف سے سمندر پار پاکستانیوں سے ڈالر اپیل کی خبر پر تبصرہ کرتے ہوے ڈنمارک کے اقلیتی اردو ریڈیو سے منسلک باشی قریشی نے پاکستان اور ڈنمارک میں موجود اردو میڈیا پر بہتان بازی شروع کر دی

باشی قریشی نے سوشل میڈیا فیس بک پر تبصرہ کرتے ہوے پاکستان اور ڈنمارک میں موجود اردو میڈیا پر الزام لگایا کہ ”وہ عمران خان مخالف، ترقی مخالف اور پاکستان مخالف ہے اس لیے وہ بھاڑ میں جائیں”

باشی نے مزید لکھا کہ ” جب میں اردو میڈیا کی بات کرتا ہوں تو پاکستان کے میڈیا کی ہے، خاص طور پر اخبارات. ڈنمارک میں ہمارے پاس کوئی اردو اخبار نہیں لیکن صرف رنگین ماہانہ میگزین، کسی مواد اور سنجیدہ مضامین کے بغیر. اگر ڈنمارک میں پرنٹ میڈیا پر بات کریں تو ان گندے میگزینوں کی حمایت کریں (شاید وہ حمایت نہ کریں لکھنا چاہتے تھے). اگر یہ میگزین زندہ رہنا چاہتے ہیں تو انھیں اپنے مواد میں بہتری لانا ہو گی ”

دوسری طرف باشی نے اپنی الزام تراشی کے جواب میں کوئی ثبوت پیش نہیں کیے. وہ یہاں بتانے سے قاصر رہے کہ پاکستان کا اردو میڈیا کس طرح عمران خان، ترقی اور پاکستان کا مخالف ہے؟ وہ ڈنمارک میں موجود پاکستانیوں کی طرف سے پاکستان بھیجی گئی رقوم کا ذکر بھی کر دیتے تو کیا خوب رہتا

یاد رہے کہ اردو ورلڈ نیوز کی خبر کے مطابق عمران خان نے وزیر اعظم بننے کے فوری بعد سمندر پار پاکستانیوں سے وافر مقدار میں ڈالر پاکستان بھیجنے کی اپیل کی تھی

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کی اپیل کے بعد سمندر پار پاکستانیوں کی طرف سے پاکستان بھیجی گئی رقوم میں خاطر خواہ اضافہ نہیں ہوا

اپنی اپیل کی ناکامی کے تین ہفتے بعد عمران خان نے کل آٹھ ستمبر کو سمندر پار پاکستانیوں سے رقم بھیجنے کی دوبارہ اپیل کی ہے