جلالپور جٹاں میں قبضہ مافیا اور جرائم پیشہ گروہ نے تھانہ سٹی کو خرید لیا

جلالپور جٹاں میں قبضہ مافیا اور جرائم پیشہ گروہ نے تھانہ سٹی کو خرید لیا

نمائندہ اردو ورلڈ نیوز کے مطابق جلالپور جٹاں اس وقت پوری طرح قبضہ مافیا اور جرائم پیشہ گروہوں کے قبضے میں آ چکا ہے

جائیدادوں پر دن دہاڑے قبضے، سٹریٹ کرائم اور بھتے کے وارداتیں معمول کا حصہ بن چکی ہیں

جب اردو ورلڈ نیوز کے نمائندے نے ان معاملات کو اندر سے جھانکنے کی کوشش کی تو پتا چلا کہ تھانہ سٹی ان جرائم پیشہ افراد کے ساتھ مل چکا ہے

تفصیلات کے مطابق قبضہ مافیا کی ایک واردات میں مافیا کی سرغنہ غزالہ بیگم عرف غزالی نے اپنے گینگ کے ساتھ مل کر تمام تالے توڑتے ہوے ایک مکان پر قبضہ کر لیا

قبضہ مافیا کی طرف سے مکان پر قبضے کی اطلاع ملتے ہی 15 سروس حرکت میں آ گئی اور موقع پر پہنچ کر مافیا کے گروہ کو بھاگنے پر مجبور کر دیا

قبضہ مافیا کے خلاف جلالپور جٹاں کے تھانہ سٹی میں مقدمہ درج کیا گیا مگر پھر پولیس کے وہی روایتی ہتھکنڈے شروع ہو گئے

پولیس کی جانب سے میڈیا کو خبر دی گئی کہ ملزمان کے خلاف کاروائی جاری ہے اور ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں

مگر اندر کے حالات کچھ اور ہی تھے

اے ایس آئی کے بھتہ گینگ سے تعلقات

پولیس کاروائی ایک ”شاہ ” نام کے اے ایس آئی کی وجہ سے سست روی کا شکار ہو گئی اور اس مشکوک اے ایس آئی کے قبضہ گینگ سے تعلقات بتاۓ جاتے ہیں

پولیس کے افسران کی ملی بگھت کی وجہ سے کوئی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی اور قبضہ مافیا سر عام شہر میں دندناتے پھر رہے ہیں

کیس خارج

جلالپور جٹاں کے تھانہ سٹی کی پولیس نے ملی بگھت سے قبضہ مافیا کے ملزمان کے خلاف درج کیا جانے والا کیس بھی خفیہ طور پر خارج کر دیا گیا اور کسی کو کانوں کان خبر تک نہ ہونے دی. کہا جاتا ہے کہ پولیس نے دونوں طرف کی پارٹیوں سے خوب مال کمایا

مزید وارداتیں

دوسری طرف جلالپور جٹاں میں راہزنی، موٹر سایکل چوری اور خواتین کے کانوں سے دن دھاڑے بالیاں نوچنا تو معمول کی بات بن چکی ہے

جرم کا شکار بنی جلالپور جٹاں کی یہ عوام پولیس کے پاس جانے سے ڈرتی ہے

نیا ایس ایچ او

جلالپور جٹاں کے تھانہ سٹی میں نئے ایس ایچ او حافظ مشتاق نے اگست کے مہینے میں اپنا چارج سنبھالا اور اپنی تعیناتی کے کچھ ہی دنوں بعد ڈاکوں نے نئے ایس ایچ او کو سلامی پیش کرتے ہوے تین لیڈی ہیلتھ ورکروں کو ان کے زیورات سے محروم کر دیا

اس کے بعد تو جیسے رہزنی کا سیلاب ہی امڈ آیا ہو ، کوئی دن نہیں گزرتا کہ جلالپور جٹاں میں سکوں مل سکے

جرم کی ان وارداتوں پر ایس ایچ او نے ستو پینے کا بیڑہ اٹھایا اور ستو پی کر آرام کی نیند سو گئے

جلالپور جٹاں کی عوام سے گزارش ہے کہ ستو پی کو سو رہے ایس ایچ او حافظ مشتاق کو اٹھانے کی کوشش میں اپنا اور حکومت کا وقت برباد مت کریں

اور

جاگتے رہنا، ہم پر نہ رہنا

والی نعرے پر عمل کریں