خیبر پختون خواہ میں علاج کی سہولیات نہ ہونے کے برابر

عمران خان کی حکومت والے صوبے خیبر پختون خواہ میں علاج کی سہولیات نہ ہونے کے برابر ہیں

پشاور میں کام کرنے والے ڈاکٹروں کے مطابق نئے پیدا ہونے والے بچوں کے لیے علاج کی سہولت بہت کم ہے

لیڈی ریڈنگ ہسپتال، جو کہ خیبر پختون خواہ کا سب سے بڑا ہسپتال ہے، کے نرسری وارڈ میں صرف اڑتیس بیڈ اور صرف پچیس انکیوبیٹر ہیں

پشاور لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں ایک انکیوبیٹر میں چار پانچ نولومود بچے ڈال کر علاج کیا جارہا ہے ہسپتال میں

Due to a shortage of beds, it common to accommodate more than one infant on the same bed. — Photo by author

صرف اڑتیس بیڈ اور گیارہ انکیوبیٹر ہیں جبکہ آنے والے مریض بچوں کی روزانہ تعداد تقریباً ۶۰ ہے کیا اس سے

A doctor treats multiple babies accommodated on a single bed. — Photo by authorبہتر صحت کا انصاف دنیا میں کہیں اور ملے گا ؟؟

Three children fitted in one incubator, increasing the risk of transmission of infection diseases. — Photo by author